فلم’دی برادرہوڈ‘ دادری میں اخلاق کے قتل سے پیدا ہوئے حالات پر مبنی: پنکج پراشر

نئی دہلی: (یو این آئی) اترپردیش کے نوئیڈا سے ملحق دادری کے بساہڑا گاؤں میں گاو کشی کے شبہ میں ایک مسلمشخص اخلاق کے قتل سے پیدا ہوئے حالات میں بھی یہاں کی گنگا جمنی تہذیب پر کوئی اثر نہیں پڑا اور ہندواور مسلمان کنبے پورے سکون اور بھائی چارے کے ساتھ یہاں رہ رہے ہیں۔ دادری کی یہی زندہ دلی کو ملے گی ‘دی برادرہوڈ’ نامی دستاویزی فلم میں۔گریٹر نوئیڈا پریس کلب کے تعاون سے صحافی اور دستاویزی فلم ساز پنکج پراشر نے یہ بنائی ہے۔ اس فلم کے ٹریلر کو یو ٹیوب پر جاری کیا گیا ہے جو ان دنوں سرخیوں میں ہے۔
سماجی مسائل پر اس سے پہلے بھی کئی فلم بناچکے پنکج نے کہا کہ ایسے افسوسناک واقعات پریشانی تو پیدا کر سکتے ہیں لیکن ہندو اور مسلمانوں کے درمیان گہرے تعلقات کو ختم نہیں کر سکتے ہیں۔انہوں نے کہا، ” ‘دی برادرہوڈ’ میں بساہڑا معاملہ اور اخلاق کے قتل سے پیدا ہوئے حالات کو دکھایا گیا ہے۔ یہاں کے دو گاوں گھوڑی بچھیڑا اور تل بیگمپورا کے درمیان تعلقات اس دستاویزی فلم کا اہم موضوع ہیں۔ پنکج کے مطابق 28 ستمبر 2015 کی رات دادری کے گاؤں بساہڑا میں گاو کشی کے الزام میں اخلاق کے قتل کے بعد سیاسی فوائد کے لیے ایسا ماحول بنایا گیا کہ ہندو اور مسلمان ساتھ نہیں رہ سکتے، لیکن وہاں کی تصویر بالکل مختلف ہے۔
اس علاقے میں ہندو اور مسلمانوں کے رشتوں کو دکھانے کے لئے یہ دستاویزی فلم بنائی گئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ کہ بساہڑا کے پڑوس میں ہی گھوڑی بچھیڑا اور تل بیگمپور گاؤں ہے۔گھوڑی بچھیڑاگاوں میں بھاٹی گوتر کے ہندو ٹھاکر ہیں اور تل بیگمپور میں بھاٹی گوتر کے مسلم ٹھاکر ہیں۔ گھوڑی بچھیڑا گاؤں تل بیگمپور گاؤں کو اپنا بڑا بھائی سمجھتا ہے۔ مطلب، ایک ہندو گاؤں کا بڑا بھائی مسلم گاؤں ہے۔ ‘دی برادرہوڈ’ کے شریک ڈائریکٹرہیم وتی نندن رجورا نے کہا کہ یہ دستاویزی فلم 24 منٹ کی ہے اور اس میں گریٹر نوئیڈا اور دادری کے علاوہ جیسلمیر، سومناتھ اوررشی کیش سے منسلک تاریخی واقعات اور مقامات دیکھنے کو ملیں گے جس سے یہ ثابت ہوگا کہ ملک میں گنگا۔ جمنی تہذیب کی کئی مثالوں میں سے دادری بھی ایک ہے۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: The brotherhood documentary film by pankaj parashar in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply