شرمین عبید نے دوسرا آسکر ایوارڈ جیت کر نئی تاریخ مرتب کی

اسلام آباد: پاکستانی فلم ساز شرمین عبید چنائے نے، جو صحافی اور سماجی کارکن بھی ہیں، دوسری بار آسکر ایوارڈ جیت کرپاکستان کا سر فکر سے بلند اور سینہ پھلا دیا۔شرمین کو ان کی دستاویزی فلم اے گرل ان دی ریور کو بہترین دستاویزی فلم قرار دیا گیا ۔ اس فلم میں ایک18سالہ لڑکی کی کہانی ہے جو ناموس کے نام پر قتل کیے جانے سے کسی طرح بچ جاتی ہے۔ پاکستانی ڈیزائنر ثناءسفیناز کے تیار کردہ سیاہ فرشی اوور کوٹ اور اسی سے میل کھاتے ہوئے لباس میں ملبوس شرمین اپنی والدہ اور ایس او سی فلمز کی ٹیم کے ہمراہ سرخ قالین سے گذرتے ہوئے ایوارڈ لینے پہنچیں۔شرمین نے ایوارڈ قبول کرتے ہوئے کہا کہ ” یہ میرا دوسرا آسکر ہے“ اس سے قبل2012میں انہیں ”سیونگ فیس “ پر بھی ایوارڈ مل چکا ہے۔شرمین نے کہا کہ جب کوئی اولوالعزم خواتین متحد ہو جائیں تو ایسا ہی ہوتا ہے۔ میں نے صبا نام کی لڑکی سے، جس نے ہمت کا مظاہرہ کرتے ہوئے خود کو غیرت کے نام پر ہلاک ہونے سے بچایا،ایچ بی او سے شیلا نیونس اور زا ہیلر اور پہلے ہی روز سے میری ہمت بندھانے والی ٹینا براو¿ن تک سب سے مشاورت کی ۔ شرمین نے کہا کہ اس فلم کی اتنی طاقت ہے کہ وزیر اعظم تک نے فلم دیکھنے کے بعد کہا کہ وہ غیرت کے نام پر قتل کیے جانے کے حوالے سے قانون میں ترمیم کریں گے۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sharmeen won second oskar award in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply