فلم کی تشہیر سے بچنے کے لئے بیمار ہونے کا بہانا کرتا ہوں: ٹائیگر شراف

نئی دہلی: ایکٹر ٹائیگر شراف ان دنوں اپنی آنے والی فلم’باغی 2‘ کی تشہیر میں جی جان سے لگے ہیں۔ اسی سلسلے میں اداکار شراف میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انہیں فلم کی شوٹنگ سے زیادہ تھکان فلم کی تشہیر کے دوران ہوتی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ با ر بار ایک ہی سوال اور ایک جیسے جواب دینا ان کواچھا نہیں لگتا ہے۔ فلم ’ باغی 2‘ کے بارے میں بات کرتے ہوئے ٹائیگر شراف کہتے ہیں کہ فلم میں ہم ایک الگ طرح کا ایکشن دیکھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
ا سکی کہانی پہلے پارٹ والی فلم سے الگ ہے۔ ٹائیگر نے کہا کہ میں فلم میں ایک آرمی آفیسر کا کردار ادا کر رہا ہوں۔ اسی وجہ سے مجھے اپنے بالوں کی قربانی بھی دینی پڑی ہے، کیونکہ یہ ایک سسپینس فلم ہے ا سلئے میں آپ کو اسی کی کہانی نہیں بتاؤں گا۔ فلم کا ٹیلر ریلیز ہونے کے بعد لوگوں سے ملے تاثرات پر ٹائیگر نے کہا ’ فلم کا ٹیلر اور پہلا ڈرافٹ دیکھنے کے بعد مجھے جو سب سے بڑا کامپلیمنٹ ملا وہ تھا پروڈیوسر ساجد ناڈیاڈ والا کا فلم کا تیسرا پارٹ بنانے کا فیصلہ لینا۔
انہو ںنے فلم کا پہلا ڈرافٹ دیکھا اور وہ انہیں بہت پسند آیا کہ انہوںنے باغی 2کے ریلیز ہونے سے پہلے باغی 3بنانے کا اعلان کر دیا۔ اس سے بڑی میرے لئے کوئی اور خوشی نہیں ہو سکتی ۔ ٹائیگر نے کہا کہ ان کے اس فیصلے سے میرے اندر کافی اعتماد پیدا ہوگیا ہے۔ فلم کی تشہیر کو لیکر ٹائیگر نے کہا کہ فلم کا پرموشن کرنا مجھے تھکا دیتا ہے۔ فلم پرچار کے وقت بہت زیادہ بھاگ دوڑ ہوتی ہے۔
دن بھر انٹریو دینا ، میڈیا چینل میں جانا اور ریڈیو اسٹوڈیو جانا کافی محنت کا کام ہے ہر جگہ جانا اور ہر بار وہی سوال جواب اسی مسکراہٹ کے ساتھ بار بار وہی جواب دینا کافی مشکل لگتا ہے۔اداکار شراف کہتے ہیں کہ میں تشہیر سے بچنے کے لئے خوب بہانے کرتا ہوں ، اور کہتا ہوں کہ بیمار ہوں اور اپنی ٹیم کو بیوقوف بنا تا ہوں۔ اس طرح سے فلم کی تشہر کرنے سے بچتا ہوں۔ فلم باغی 2مارچ 30 کو سنیما گھروں کی زینت بنے گی۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pretend to be sick to avoid promotional activities of the filmsays tiger shrof in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply