سعادت حسن منٹو کی سوانح حیات پر فلم بنے گی

نئی دہلی:(یو این آئی) اردو کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی زندگی پر پانچ کروڑ روپے کی لاگت سے ایک فیچر فلم بننے جا رہی ہے۔ ہندوستان میں منٹو پر بننے والی یہ پہلی فیچر فلم ہے۔
گذشتہ سال پاکستان میں منٹو پر ایک فلم بنی تھی۔ غالب کے بعد منٹو اردو کے دوسرے مصنف ہیں جن پر کوئی فیچر فلم بن رہی ہے۔ دہلی کے مشہور ڈرامہ آرٹسٹ اور ڈائریکٹر آر ایس وکل ان پر سوا دو گھنٹے کی فلم بنا رہے ہیں۔ مسٹر وکل نے یواین آئی کو بتایا کہ 11 مئی 1912 کو لدھیانہ ضلع کے سمرالا میں ایک کشمیری مسلم خاندان میں پیدا ہوئے منٹو کی زندگی پر ’منٹو زندہ ہے‘ نامی فلم بنانے کے لئے انہوں نے تقریبا ایک سو بیس صفحے کی اسکرپٹ تیار کر لی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ منٹو کا کردار ادا کرنے کے لئے پاکستانی اداکاروں سے بات چل رہی ہے۔
اس فلم میں منٹو کی بیوی صفیہ کے علاوہ مرحوم اداکار اشوک کمار، مشہور گلوکارہ نورجہاں، معروف اداکارہ نرگس، نامور رقاصہ ستارہ دیوی اور گزشتہ زمانے کے مشہور اداکار شیام سمیت دس کردار ہوں گے، جن سے منٹو کے قریبی تعلقات رہے۔
منٹو نے اپنی مشہور کتاب مینا بازار میں اشوک کمار، نرگس، شیام اور ستارہ دیوی کے بارے میں یادداشتوں لکھا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ فلم میں اشوک کمار کے کردار کو بنیادی طور پر دکھایا گیا ہے کیونکہ منٹو کے ساتھ ان کے زیادہ دن گزرے۔ نورجہاں سے بھی ان کے نزدیکی رشتے تھے۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Film on manto to be made in india in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply