بالی ووڈ کے اسٹار میکر کیدار شرما کو 18ویں برسی پر فلمی دنیا کا خراج عقیدت

ممبئی: بالی ووڈ میں کیدار شرما کا نام، جن کی آج 18ویں برسی ہے، ایک ایسے فلمساز کے طور پر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے راج کپور، بھارت بھوشن، مدھوبالا، گیتابالی، مالا سنہا اور تنوجہ جیسی نامور شخصیات کو فلم انڈسٹری میں متعارف کرانے میں اہم کردار نبھایا۔ 12 اپریل 1910 کو پنجاب کے نرول شہر(پاکستان) میں پیدا ہوئے کیدار نے اپنی ابتدائی تعلیم امرتسر سے مکمل کی۔اس کے بعد وہ روزگار کی تلاش میں ممبئی آ گئے لیکن وہاں کام نہیں ملنے کی وجہ سے وہ امرتسر واپس لوٹ آئے۔ اس درمیان انہوں نے امرتسر کے خالصہ کالج سے گریجویشن مکمل کیا۔ سال 1933 میں کیدار کو دیوکی بوس کی ہدایت والی فلم ”پران بھگت“ دیکھنے کا موقع ملا۔ اس فلم سے وہ اس قدر متاثر ہوئے کہ انہوں نے فیصلہ کیا کہ وہ فلموں میں ہی اپنا کیریئر بنائیں گےاور اپنے اسی خواب کو پورا کرنے کے لئے وہ کلکتہ چلے گئے۔ کلکتہ میں کیدار کی ملاقات فلم ساز دیوکی بوس سے ہوئی اور ان کی سفارش سے انہیں نیو تھیٹر میں بطور سنیماٹوگرافر شامل کر لیا گیا۔ فلم’سیتا‘ بطورسنیماٹوگرافر کیدار کی پہلی فلم تھی۔ اس کے بعد نیو تھیٹر کی فلم’انقلاب‘ میں انہیں ایک چھوٹا سا کردار ادا کرنے کا موقع ملا۔ سال 1936 میں آئی فلم”دیوداس“ کیدار شرما کے فلمی کیریئر کی اہم فلم ثابت ہوئی۔ اس فلم میں وہ بطورکہانی نویس اور نغمہ نگار کے کردار میں تھے۔ یہ فلم ہٹ رہی اور کیدار فلم انڈسٹری میں اپنی شناخت بنانے میں کامیاب ہو گئے۔1940 میں انہیں ایک فلم ”تمہاری جیت“ کی ہدایت کا موقع ملا لیکن بدقسمتی سے یہ فلم مکمل نہیں ہو سکی۔ اس کے بعد انہوں نے اولاد فلم کی ہدایت کا کام کیا اس فلم کی کامیابی کے بعد کسی حد تک وہ بطور ڈائریکٹر اپنی شناخت بنانے میں کامیاب ہوئے۔ 1941 میں انہیں ”چترلیکھا“ فلم کی ہدایتکاری کرنے کا موقع ملا۔ یہ فلم کامیاب رہی۔ چترلیکھا کی کامیابی کے بعد کیدار شرما بطور ڈائریکٹر فلم انڈسٹری میں چھا گئے۔ اس فلم میں نہانے کے سین کے بعد اداکارہ مہتاب شائقین کے درمیان کافی مقبول ہوگیئں۔ کیدار نے چترلیکھا فلم میں جب مہتاب سے غسل منظر کی فلم بندی کی تجویز پیش کی تو مہتاب بولیں،”یہ سین آپ ناظرین کیلئے رکھنا چاہتے ہیں یا صرف اپنی خوشی کے لئے“۔ کیدار نے تب مہتاب کو سمجھایا، ”دیکھو سیٹ پر اداکارہ اور ڈائریکٹر کا رشتہ باپ بیٹی کا ہوتا ہے“۔ ان کی یہ بات مہتاب کے دل کو چھو گئی اورانہوں نے کیدار کے سامنے یہ شرط رکھی کہ منظر فلماتے وقت سیٹ پر صرف وہی موجود رہیں گے ۔ سال 1947 میں کیدار نے فلم نیل کمل کے ذریعے راج کپور کو پہلی مرتبہ سلورسکرین پر پیش کیا۔قبل ازیں راج کپوران کے یونٹ میں کلیپر بوائے کا کام کیا کرتے تھے۔1950 میں کیدار نے فلم”باورے نین“ بنائی اور گیتا بالی کو پہلی مرتبہ بطور اداکارہ کام کرنے کا موقع دیا۔ سال 1950 میں ہی کیدار کی ایک اور سپر ہٹ فلم ”جوگن“ بنائی جس میں دلیپ کمار اور نرگس کے اہم کردار تھے۔ کیدار کی یہ خاصیت تھی کہ جن فنکاروں کے کام سے وہ خوش ہوتے انہیں پیتل کا سکہ دے کر نوازا کرتے تھے۔ راج کپور، دلیپ کمار، گیتابالی اور نرگس کو یہ اعزاز حاصل ہوا تھا۔ کیدار نے کئی فلموں میں اپنی اداکاری سے بھی ناظرین کا دل جیتا۔ ان فلموں میں انقلاب، پجارن، ودیاپتی، بڑی دیدی، نیکی اور بدی شامل ہیں۔ انہوں نے کئی فلموں کیلئے نغمے بھی لکھے۔ کیدار نے بچوں کے لیے بھی کئی فلمیں بنائی ہیں۔ ان میں جے دیپ، گنگا کی لہریں، گلاب کا پھول، 26 جنوری،ایکتا، چیتک، میرا کا چتر، مہاتیرتھی اور خدا حافظ شامل ہیں۔ تقریباً پانچ دہائی تک اپنی فلموں کے ذریعے ناظرین کے دل پر راج کرنے والے عظیم فلمساز کیدار شرما 29 اپریل 1999 کو اس دنیا کو الوداع کہہ گئے۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Death anniversary of kidar sharma in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply