دلیپ کمار چیک واپسی کیس میں الزامات سے 18سال بعد بری

نئی دہلی: 18سال کے طویل وقفہ کے بعد بالی ووڈ اداکار دلیپ کمار چیک واپسی کیس میں تمام الزامات سے بری ہو گئے۔منگل کے روز گیر گم(ممبئی) مجسٹریٹی عدالت نے دلیپ کمار کو بے قصور پایا اور ان کے خلاف تمام الزامات خارج کر دیے۔جس وقت فیصلہ سنایا گیا تو ا س وقت دلیپ کمار عدالت میں موجود نہیں تھے کیونکہ انہیں شخصی طور پر پیش ہونے سے استثنیٰ حاصل تھا۔ایک ایکسپورٹ بزنس کمپنی گریکے ایکزم انڈیا لمیٹڈ ملک میں مختلف قرضہ دہندگان سے سیکڑوں کروڑادھار لیے تھے۔ دلیپ کمار اس کمپنی کے اعزازی چیرمین تھے۔1998میں کمپنی نے ادائیگی کے کئی چیک جاری کیے اور وہ چیک باو¿نس ہوتے رہے۔جس کے باعث کمپنی سے وانستہ ہر شخص کے خلاف کیس دائر کیے جاتے رہے۔ انہیں میں اعزازی چیرمین کے طور پر کمپنی سے وابستہ دلیپ کمار بھی شامل تھے۔آج جب کیس کے فیصلہ کی تاریخ تھی تو عدالتی کارروائی سے پہلے ہی دلیپ کمار کی اہلیہ نے ان کے پرستاروں سے التجا کی تھی کہ وہ دعا کریں کہ18سال سے چل رہے اس مقدمہ کا دلیپ صاحب کی صحت پر خراب اثر نہ پڑے۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cheque bounce case dilip kr acquitted after 18 years in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply