طلاق ثلاثہ اور حلالہ پر بنی مراٹھی فلم ’حلال‘پر پابندی کا مطالبہ

ممبئی:(یواین آئی)مراٹھی فلم ’حلال‘ میں اسلام کی تعلیمات کوغلط ومنفی انداز میں پیش کرنے پر فلم کی نمائش کو روکنے کا مطالبہ زورپکڑرہا ہے اور عوامی وکاس پارٹی (اے وی پی) کے صدراورسابق اے سی پی شمشیر خان پٹھان نے اعلان کیا ہے کہ مذکورہ فلم کو ریلیز ہونے سے روکنے کے لیے وہ عدالت سے رجوع کریں گے۔
شمشیر خان پٹھان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ مراٹھی فلم ’حلال ‘ 6اکتوبر کو ریلیز ہوگی اور اس کے ٹریلرکے منظر عام پر آنے سے اس بات کا انکشاف ہوا کہ فلم طلاق ثلاثہ اور حلالہ پر مبنی ہے ،فلم کی کہانی کے مطابق بیوی سے ناراضگی کے بعد شوہراسے ایک ساتھ تین مرتبہ طلاق کہہ کر سسرال بھیج دیتا ہے ،پھر اسے افسوس ہونے لگتا ہے اور وہ بیوی کو لینے سسرال پہنچتا ہے ،تب اسے ایک مسجد کے امام یا مولانا سے پتہ چلتا ہے کہ بیوی سے ازدوجی رشتہ قائم کرنے کے لیے بیوی کو حلالہ کے طورپر دوسرے شخص کے ساتھ نکاح کرنا ہوگا۔
فلم میں یہ دکھانے کی کوشش کی گئی ہے کہ پنچایت کے بعد مولانا خود طلاق شدہ لڑکی سے نکاح کرلیں اور اس کے بعد طلاق دے دی جائے ،شمشیرخان پٹھان کا الزام ہے کہ طلاق ثلاثہ اور حلالہ کو فلم میں بھونڈے انداز سے پیش کیا گیا جوکہ اسلامی تعلیمات کے خلاف ہے اور ایک مولانا کو خود نکاح کرتے ہوئے دکھا یا گیا جوکہ سراسرغلط طریقہ ہے ۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Avp activists demand ban on halal film in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ Entertainment Urdu News

Leave a Reply