ناظرین کو سنیما ہال تک لانے کیلئے ہمیں باہو بلی جیسی فلمیں بنا نی ہوں گی: اجے دیو گن

نئی دہلی : بالی و ڈ ایکٹر اجے دیوگن کا کہنا کہ ڈجیٹل کے اس دور میں اچھی فلمیں بنانا کافی مشکل ہو رہا ہے۔ ناظرین کو سنیما گھروںتک لانے کے لئے اب ایسی فلمیں بنانے کی ضرورت ہے جنہیں بڑے پردے پر ہی دیکھنے میں لطف آسکتا ہے ۔
انٹر نیٹ کے دور میں فلم بینوں کے پاس بہت ساری بہترین کہانیاں ہیں جو نیٹ پر موجود ہیں، جسے وہ گھر بیٹھے دیکھ سکتے ہیں۔ اجے دیوگن کہتے ہیں کہ ” کتنا بھی ڈجیٹل کا زمانہ آ جائے سنیما ہال تو کبھی ختم نہیں ہوں گے، ایسا کبھی بھی نہیں ہوگا کہ سنیما ہال نہ رہے۔ ہاں اب ایک چیز ضرور ہو رہی ہے اور آگے بھی ہوگی ، جس میں آپ کو کچھ بھی فلم بنانے سے پہلے یہ سوچنا ہو گا کہ آپ کیا بنا رہے ہیں۔
انٹر نیٹ کے دور میں جہاں ناظرین کے پاس تفریح کے لئے بہت سارے متبادل ہیں اس لیے جو دل میں آئے وہ بنا کر پیش نہیں کر سکتے ۔ اب آپ کو سنجیدگی سے سوچنا ہوگا کہ آپ کیا بنا رہے ہیں۔
اجے کا کہنا ہے کہ خود میرے ساتھ ایسا ہوتا ہے ۔جب کوئی چھوٹی اور بہت اچھی فلم کے بارے میں سنتا ہوں تو سوچتا ہوں یار یہ تو میں ڈجیٹل میں دیکھ لوں گا لیکن جب کوئی ایسی فلمیں ہوتی ہیں جسے بڑے پردے پر دیکھ کر ہی لطف اندوز ہوا جا سکتا ہے سنیما ہال ہی جانا پڑے گا، جیسے فلم باہو بالی تھی۔
اجے دیوگن نے کہا ہمیں باہو بلی جیسی فلمیں بنا نی ہوگی۔ باہو بلی جیسی فلم کو دیکھنے کے لئے بڑے پردے تک جانا ہی ہوگا۔ دیوگن نے کہا کہ نفع نقصان کی پروا کیے بغیر ہمیں بڑے پردے کی فلم بنانا ہوگی ۔

Title: ajay devgn now we have to make film like bahubali | In Category: انٹرٹینمنٹ  ( entertainment )

Leave a Reply