بالی ووڈ کے افغان پرستار نے کروڑوں روپے ہندی فلموں کا ذخیرہ کرنے پر خرچ کر دیے

 کابل: افغانستان کے ایک ارب پتی کو ہندوستانی فلمیں اور نئے پرانے اداکار اس قدر محبوب ، پسندیدہ اور ہر دلعزیز ہیں کہ اس شخص نے 1940سے1980تک ریلیز ہونے والی کم و بیش تمام فلموں کا ذخیرہ کرنے پر کروڑوں روپے خرچ کر دیے۔ 63سالہ افغانستان نژاد سعودی شہری امان اللہ نظامی نے اس وقت ہندوستانی حکام کو حیرت زدہ کر دیا جب وہ پانچ سالہ مدت کے ویزے پر ہندوستان پہنچے ۔
جبکہ اتنی طویل مدت کا ویزا شاذ و نادر ہی کسی غیر سفارتی غیر ملکی کو دیا جاتا ہے۔وہ فی الحال سعودی عرب میں رہائش پذیر ہیں اور الخلیفہ کے تحت کئی ریستوران اور ہوٹل چلا رہے ہیں اور وہ ہر سال کم از کم ایک مہینہ ہندوستان میں رہتے ہیں ۔انکی ہندی فلموں سے دلچسپی نے انہیں بیرون ہند ہندی فلموں کا غیر اعلان شدہ برانڈ ایمبیسیڈر بنا دیا ہے۔نظامی نے بتایا کہ ان کے پاس 5ہزار6سو ستر فلمیں ہیں ۔اور ان فلموں کے 70ہزار گانے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ہندی فلموں کے ان کے شوق نے انہیں آدھا ہندوستانی بنا دیا ہے۔واضح رہے کہ افغانستان بالی ووڈ فلموں کا سب سے بڑا غیر ملکی بازار ہے۔ جہاں امیتابھ بچن، دھرمیندر اور ہیما مالنی کے پرستاروں کی آج بھی ایک کثیر تعداد ہے۔ نئی نسل میں بھی عصرحاضر کے شاہ رخ خان، ریتک روشن، جان ابراہام اور کٹرینہ کیف کے پرستاروں کی کثیر تعدادہے ۔

Read all Latest entertainment news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from entertainment and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: afghan bollywood fan spent millions to have largest collection of hindi movies in Urdu | In Category: انٹرٹینمنٹ  ( entertainment ) Urdu News

Leave a Reply