بے میل آمدنی اور لین دین والے18لاکھ کھاتے داروں کو نوٹس جاری: وزیر مالیات جیٹلی

نئی دہلی: حکومت نے آج کہا ہے کہ ایسے 18 لاکھ بینک اکاؤنٹس کی نشاندہی کی گئی ہے جن کے کھاتے داروں کی آمدنی اور لین دین کا ریکارڈ نوٹ بند کیے جانے کے دوران ان میں جمع کرائی گئی رقم سے میل نہیں کھاتے۔ ایسے کھاتے داروں کو نوٹس بھیجے جا رہے ہیں اور کچھ اکاؤنٹ ہولڈروں کے جواب بھی آنے شروع ہو گئے ہیں۔
وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے لوک سبھا میں وقفہ سوال کے دوران بڑھتے سائبر جرائم کے حوالے سے کیے گئے ایک ضمنی سوال کے جواب میں کہاکہ بینکاری نظام کی توسیع اورڈیجیٹل سسٹم کے ساتھ سائبر جرائم کے معاملات میں اضافہ ہونا فطری بات ہے، لیکن اس خوف سے ڈیجیٹل سسٹم سے رو گردانی نہیں کی جا سکتی۔ ظاہر ہے کہ جب ڈیجیٹل سسٹم کا دائرہ بڑھ رہا ہے تواس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کا خطرہ بھی ہوگا۔
اس سے تحفظ کے لئے بینکاری صنعت کے پاس ماہرین موجود ہیں۔ سائبر جرائم میں اضافہ ہوگا، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہم ڈیجیٹل سسٹم کو اختیار ہی نہ کریں۔کانگریس کے رکن ششی تھرور نے نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے اعداد و شمار کا حوالہ دے کر کہا کہ سال 2015 میں ملک میں سائبر جرائم کے معاملات میں 21.6 فیصد اضافہ ہوا ہے جن میں زیادہ تر بینکاری سے وابستہ جرائم ہیں۔
انہوں نے حکومت سے ان سے نمٹنے کے لئے کئے جانے والے اقدامات کے بارے میں پوچھا تھا۔ ایک اور سوال کے جواب میں مسٹر جیٹلی نے بتایاکہ محکمہ انکم ٹیکس ، انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ اور دیگر متعلقہ ایجنسیوں نے ملک کے مختلف حصوں میں کارروائی کرتے ہوئے 141کروڑ13لاکھ روپے مالیت کے نئے2000 اور500روپے کے نوٹ ضبط کیے ہیں۔

Title: rs 141 13 cr worth of new rs 2000 rs 500 notes seized arun jaitley | In Category: بزنس  ( business )

Leave a Reply