بفر اسٹاک کے لئے 14 لاکھ ٹن سے زائد دال خریدی جا چکی ہے: رام ولاس پاسوان

نئی دہلی:حکومت نے کہا ہے کہ ملک دال کی کمی پورا کرنے کے لئے بفر اسٹاک میں 20 لاکھ ٹن دال کی خریداری کے فیصلے کے تحت اب تک 14 لاکھ ٹن سے زیادہ دال کی خریداری کی جا چکی ہے اور وہ کسانوں کو ان کی پیداوار کی مکمل قیمت دینے کے مطالبے سے اتفاق کرتے ہیں۔ لوک سبھا میں وقفہ صفر کے دوران کانگریس کے لیڈر ملک ارجن کھڑگے کی طرف سے کرناٹک میں کسانوںکو دال کی مناسب قیمت نہ ملنے سے متعلق معاملہ اٹھانے پر مداخلت کرتے ہوئے فوڈ پروسیسنگ کے مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے یہ اطلاع دی۔
انہوں نے بتایا کہ ملک میں گزشتہ سال تور دال کی قیمت 200 روپے فی کلو گرام تک پہنچی گئی تھی تو حکومت نے اسی وقت 20 لاکھ ٹن دال کے بفر اسٹاکقائم کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور اس کے تحت دالوں کی خریداری کا کام کیا جا رہا ہے۔ مسٹر ملک ارجن کھڑگے نے کہا کہ حکومت نے 10 ہزار 114 روپے فی کوئنٹل کی شرح پر دال کی درآمد کی گئی ہے جبکہ اس نے کسان کے لئے دالوں کی کم از کم امدادی قیمت 5050 روپے فی کوئنٹل طے کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر اسی قیمت پر ریاستوں سے دال خریدی جاتی تو اس کا سیدھا فائدہ ملک کے کسانوں کو ملتا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ کسانوں کو اپنی پیداوار کی پوری قیمت نہیں مل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک حکومت نے کسانوں کو دال پر 415 روپے فی کوئنٹل کی شرح سے بونس دیا ہے لیکن یہ اس کی لاگت سے بہت کم ہے۔

Read all Latest business news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from business and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Purchase of pulses for buffer stock exceeds 14 lakh tonnes paswan in Urdu | In Category: بزنس Business Urdu News

Leave a Reply