بڑے نوٹ بند کرنے سے سیاحت میں65فیصد کمی واقع ہو گئی: صنعتی تنظیم اسوچم کا سروے

نئی دہلی: کرسمس اور نئے سال جیسے مواقع پر ہر سال سیاحتی مقامات پر لگنے والی سیاحوں کی بھیڑ اس سال نوٹ بند کرنے کے فیصلہ کے باعث نہیں نظر آئے گی۔ صنعتی تنظیم ایسوچیم کے تازہ سروے کے مطابق ہزار اور پانچ سو کے پرانے نوٹوں کے زیر گردش نہ رہنے دینے کے فیصلہ سے اس موسم میں ہونے والی گھریلو بکنگ میں کم از کم 65 فیصد کمی آ گئی ہے۔
اکتوبر اور نومبر میںشروع ہونے والا سیاحت کا موسم کرسمس اور نئے سال کے وقت پروان چڑھتا ہے لیکن نومبر میں ہی نوٹ بند کر دینے کی مار سے سیاحوں کا رجحان کم ہو گیا ہے۔ ہر سال اس وقت سیاحوں کی بھیڑ راجستھان، مدھیہ پردیش، اتر پردیش، گجرات، اتراکھنڈ، گوا اور کیرالہ جیسے مقبول سیاحتی مقامات پر لگتی تھی۔کچھ سیاح برفباری دیکھنے ہل اسٹیشنوں پر بھی جاتے تھے۔ سروے کے مطابق اس موسم میں بین الاقوامی سیاحت کا کاروبار تقریبا 40 سے 45 فیصد اور گھریلو سیاحت 65 فیصد سے زیادہ گھٹ گئی ہے۔
نومبر، دسمبر اور جنوری کا مہینہ بین الاقوامی سیاحوں کے ہندوستان آنے کا موسم ہوتا ہے لیکن بین الاقوامی بکنگ میں بھی اس بارتیزی سے کمی آئی ہے۔ بکنگ کم ہونے سے ہوٹلوں نے اپنا روم ریٹ کم کر دیا ہے اور ہوا بازی کمپنیوں نے اپنے ٹکٹ گزشتہ سال کے اسی موسم کے مقابلے میں 30 سے 35 فیصد تک سستے کر دیے ہیں۔

Read all Latest business news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from business and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Note ban domestic tourism down 65 says assocham in Urdu | In Category: بزنس Business Urdu News

Leave a Reply