ہندوستان بھر کے بینکوں میں دو روزہ ہڑتال سے بینک کاری نظام ٹھپ

نئی دہلی: سرکاری زمرے کے بینکں میں ملک گیر پیمانے پر دو روزہ ہڑتال سے بینکوں میں کام کاج ٹھپ ہو گیا۔

ملک گیر پیمانے پر تمام بینکوں کے تقریباً10لاکھ ملازمین انتظامیہ کے ذریعہ مشاہرے میں محض2فیصد اضافہ سے ناخوش ہیں اور اس معمولی ترین اضافہ کے خلاف، جسے انڈین بینکس ایسوسی ایشن نے اونٹ کے منھ میں زیرہ اور آٹے میں نمک سے تعبیر کیا،2روز کے لیے ملک بھر کے بینک ملازمین کے ہڑتال پر چلے جانے سے اواخر ماہ میں اپنی تنخواہ کا پیسہ نکالنے والوں کے بڑی پریشانیاں کھڑی ہو گئیں کیونکہ اس ہڑتال سے اے ٹی ایم بھی متاثر ہوئے ہیں۔البتہ آئی سی آائی سی آئی ، ایچ ڈی ایف سی بینک اورایکسس بینک میں کامکاج حسب معمول رہا۔

آل انڈیا بینک امپلائز ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری سی ایچ وینکٹا چلم نے کہا کہ چونکہ بینکوں اور ان کے ملازمین کی یونینوں کے درمیان مذاکرات کے کئی دور ہوئے لیکن کوئی نتیجہ نہیں نکلا اس لیےیونائیٹڈ فورم آف بینکنگ یونینز نے گذشتہ بار 15فیصد کے مقابلہ اس بار صرف2فیصد اضافہ کی تجویز کے خلاف احتجاج میں دو روزہ ہڑتال کا فیصلہ کیا۔

Read all Latest business news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from business and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Banking services impacted as psu staff go on two day strike in Urdu | In Category: بزنس Business Urdu News

Leave a Reply