ہندوستان کے تقریباً تمام صوبوں میں اے ٹی ایم خالی ،نقدی کی شدید قلت

نئی دہلی: ملک گیر پیمانے پر نقدی کی زبردست قلت ہو گئی ہے اور آندھرا پردیش ،تلنگانہ، کرناٹک، مدھیہ پردیش، مہاراشٹر، راجستھان اور اتر پردیش یہاں تک کہ قومی دارالخلافہ میں اے ٹی ایم خالی پڑے ہیں اور ہر اے ٹی ایم پر لمبی لمبی قطاریں دیکھنے مل رہی ہیں۔ یہ لوگ اس آس میں قطاروں میں لگے ہیں کہ اے ٹی ایم میں کسی بھی قت پیس ڈالا جا سکتا ہے ۔
اس ضمن میں ریزرو بینک آف انڈیا کو ایک ای میل کیا گیا تھا کہ وہ نقدی کی مبینہ قلت کا سبب بتائے لیکن معلوم ہوا ہے کہ اس کا ابھی تک کوئی جواب نہیں آیا ہے۔صارفین نے اس کے لیے سوشل میڈیا کا سہارا لیا ہے۔
ایک شخص نے ٹوئیٹ کیا”اے ٹی ایم میں پیسہ نہیں، میں نے5اے ٹی ایم آزمائے اور چھٹے اے ٹی ایم سے ہی مجھے نقدی مل سکی لیکن وہ چھٹا اے ٹیم بھی ایک بینک کے اندر تھا۔یہ دہلی ہے۔ واقعی بڑی بھیانک صورت حال ہے“۔
جھارکھنڈ کے ایک شخص نے ٹوئیٹ کیا”15روز سے کم و بیش تمام اے ٹی ایم خالی ہیں۔ کسی کونہیں معلوم پیسہ کہاںگیا۔وزیر اعظم اور وزیر مالیات دستیاب نہیں ہیں۔
حکومت میں کوئی یہ بتانے تیار نہیں کہ 2000اور500کے نوٹ کہاں غائب ہو گئے۔‘سیتا رم یچوری نے کہا کہ نومبر 2016میں بھی اے ٹی ایم خالی ہو گئے تھے۔اس بار بھی اے ٹی ایم خالی ہیں ۔بی جے پی نے کیش غائب کر دیا۔ عام آدمی پس رہا ہے۔

Title: atms are running dry across india | In Category: بزنس  ( business )
Tags: , ,

Leave a Reply