پاکستان میں فوجی قیادت کی پر سکون منتقلی سے غیر فوجی حکومت کی برطرفی کی قیاس آرائیاں دم توڑ گئیں

سبھاش چوپڑا
لندن سے شائع ہونے والے انگریزی ماہانہ جریدے ایشین افئیرز میں معروف پاکستانی صحافی رحیم اللہ یوسف زئی رقمطراز ہیں کہ پاکستان میں فوجی قیادت کی رخصت پذیر فوجی سربراہ جنرل راحیل شریف سے جنرل قمر جاوید باجوا کو منتقلی بحسن و خوبی انجام کو پہنچی۔انہوں نے اس کا بھی خاص طور پر ذکر کیا کہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کو بھی، جن کے نقاد اور مخالفین سوچ ہی نہیں بلکہ آس لگائے بیٹھے تھے کہ جنرل راحیل ان کو اسی طرح معزول کر دیں گے جیسا کہ1999میں جنرل پرویز مشرف نے کیا تھا، راحت و سکون کا سانسلینے کا موقع ملا۔
اس امر کی جانب نشاندہی کرتے ہوئے کہ اگرچہ پاکستان میں غیر فوجی و فوجی تعلقات میں فوج کا وزن زیادہ رہنے کی روایت رہی ہے ،آخری دونوں فوجی سربراہ جنرل راحیل اور جنرل پرویز اشفاق کیانی نے غیر فوجی حکومت کی پشت پناہی کی۔ان کے دور میں پاکستانی تاریخ میں پہلی بار کسی منتخب حکومت کے بعدجمہوری طرز پر کوئی دوسری منتخب حکومت بر سر اقتدار آئی۔اور اس سے یہ ظاہر ہو گیا ہے کہ مستقبل قریب میں یہی روایت جاری رہے گی۔

Title: toppling rumours fail with smooth pak army changeover | In Category: مضامین  ( articles )

Leave a Reply